Tuesday, 21 March 2017

کہتے ھیں کہ "پنجابی کلچرل ڈے" شروع ھوا تو پاکستان نہیں رھنا؟

سندھی بھی کلچرل ڈے مناتے ھیں۔ بلوچ بھی کلچرل ڈے مناتے ھیں۔ پشتون بھی کلچرل ڈے مناتے ھیں۔ ھندوستانی مھاجروں کا "گنگا جمنا کلچر" تو ویسے ھی پاکستان کا قومی اور سرکاری کلچر قرار دیا ھوا ھے۔ اس لیے پاکستان کا قومی کلچرل ڈے اصل میں "گنگا جمنا کلچرل ڈے" ھی ھوتا ھے اور "گنگا جمنا کلچر" سارے پاکستان پر چھایا ھوا ھے۔ لیکن ابھی تک پنجابیوں نے "پنجابی کلچرل ڈے" منانا شروع نہیں کیا۔

کہتے ھیں کہ "پنجابی کلچرل ڈے" شروع ھوا تو پاکستان نہیں رھنا۔ پاکستان نہیں رھنا سے مراد یہ نہیں ھے کہ پاکستان میں سے زمین کے کسی حصے نے ویسے ھی الگ ھوجانا ھے جیسے مغربی پاکستان سے مشرقی پاکستان کا حصہ الگ ھوگیا تھا اور بعد میں مغربی پاکستان کا نام پاکستان کرنا پڑا۔

پاکستان نہیں رھنا سے مراد ھے کہ پنجابیوں نے "پنجابی کلچرل ڈے" منانا شروع کیا تو پھر پنجاب کی سب سے بڑی آبادی ' خیبر پختونخواہ کی دوسری بڑی آبادی ' بلوچستان کے پختون علاقے کی دوسری بڑی آبادی ' بلوچستان کے بلوچ علاقے کی دوسری بڑی آبادی ' سندھ کی دوسری بڑی آبادی ' کراچی کی دوسری بڑی آبادی پنجابی کے ھونے کی وجہ سے پھر پاکستان نے لگنا ھے کہ پنجابستان بن گیا ھے۔

پاکستان میں چونکہ اس وقت بھی پنجابی کی آبادی 60% ھونے کی وجہ سے شہری علاقوں' صنعت ' تجارت ' ذراعت ' سیاست ' صحافت ' ھنرمندی اور سرکاری ملازمت کے شعبوں میں 12% سندھی ' 8% مھاجر ' 8% پٹھان ' 4% بلوچ کے مقابلے میں ' پنجابی ھی چھائے ھوئے نظر آتے ھیں۔ لیکن پنجابیوں نے "پنجابی کلچرل ڈے" منانا شروع کردیا تو پھر پنجابی زبان ' پنجابی تہذیب اور پنجابی ثقافت نے بھی پاکستان میں ھر جگہ چھایا ھوا ھی نظر آنا ھے۔

پاکستان میں پہلے سے ھی پنجابیوں کے شہری علاقوں' صنعت ' تجارت ' ذراعت ' سیاست ' صحافت ' ھنرمندی اور سرکاری ملازمت کے شعبوں میں چھائے ھوئے ھونے کے ساتھ ساتھ پنجابی زبان ' پنجابی تہذیب اور پنجابی ثقافت کے بھی پاکستان میں ھر جگہ چھایا ھوا ھونے کی وجہ سے پنجابی قوم میں اتفاق ' اتحاد اور اعتماد مزید بڑہ جانا ھے۔

پنجابیوں نے "پنجابی کلچرل ڈے" منانا شروع کردیا تو پھر پنجابی قوم کو اپنے قدیم تاریخی پس منظر ' شاندار تہذیبی ورثے اور عظیم شخصیات سے بھی آگاھی ھونا شروع ھو جانی ھے۔ جس سے پنجابی قوم نے مزید منظم ' متحد اور مظبوط قوم بن جانا ھے۔ اس لیے پاکستان کا آئینی نام تو پھر بھی پاکستان ھی رھے گا جبکہ پاکستان نے سماجی اورسیاسی طور پر مستحکم ' معاشی اور اقتصادی طور پر ترقی یافتہ ' انتظامی اور دفاعی طور پر بہترین ملک بن جانا ھے لیکن عملی طور پر پاکستان نے پنجابستان بن جانا ھے۔